جِن باٹوں سے تُم تول کر دو گے!


كسان کی بيوی نے جو مكھن كسان كو تيار كر كے ديا تھا وہ اسے ليكر فروخت كرنے كيلئے اپنے گاؤں سے شہر كی طرف روانہ ہو گيا۔ یہ مكھن گول پيڑوں كی شكل ميں بنا ہوا تھا اور ہر پيڑے كا وزن ايک كلو تھا۔ شہر ميں كسان نے اس مكھن كو حسب معمول ايک دوكاندار كے ہاتھوں فروخت كيا اور دوكاندار سے چائے كی پتی، چينی، تيل اور صابن وغيرہ خريد كر واپس اپنے گاؤں كی طرف روانہ ہو گيا. كسان كے جانے بعد…… دوكاندار نے مكھن كو فريزر ميں ركھنا شروع كيا…. مزید پڑھیئے۔۔۔۔۔

Advertisements

About محمد سلیم

میرا نام محمد سلیم ہے، پاکسان کے شہر ملتان سے ہوں، تلاشِ معاش نے مجھے آجکل چین کے صوبہ گوانگ ڈانگ کے شہر شانتو میں پہنچایا ہوا ہے۔ مختلف زبانوں (عربی خصوصیت کے ساتھ) کے ایسے مضامین ضن میں اصلاح اور رہنمائی کے دروس پوشیدہ ہوں کو اردو میں ترجمہ یا تھوڑی سی ردو بدل کر کے ایمیل کرنا میرا شوق رہا ہے۔ میں اپنی گزشتہ تحاریر کو اس بلاگ پر ایک جگہ جمع کرنا چاہ رہا ہوں۔ میں مشکور ہوں کہ آپ یہاں تشریف لائے۔
This entry was posted in اصلاحی and tagged . Bookmark the permalink.

One Response to جِن باٹوں سے تُم تول کر دو گے!

  1. پنگ بیک: جِن باٹوں سے تُم تول کر دو گے! | Muhammad Saleem

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s